کیا طاہر القادری ایک فتنہ نہیں؟

میں بہت گہرائی سے سوچ رہا تھا کہ یہ طاہر القادری صاحب کیا چیز ہیں؟ اگر تمام حالات و واقعات کوتسلی سے اور گہری نظر سے دیکھا جائے تو یہ گمان ہوتا ہے کہ طاہر القادری ایک فتنہ ہے۔ کچھ سوالات میرے ذہن میں اٹھتے ہیں ان کا جواب کیا ہو سکتا ہے؟ آپ پڑھ کر خود فیصلہ کیجیے۔ کبھی تو محسوس ہوتا ہے کہ شاید طاہرالقادری ذہنی بیمار آدمی ہے۔

کچھ لوگوں سے بحث ہوئی تو وہ بضد تھے کہ طاہر القادری ٹھیک شخص ہے اور سب کچھ ٹھیک کر رہا ہے۔ میں کچھ سوالات انہی لوگوں سے اپنے اس بلاگ کی وساطت سے پوچھنا چاہوں گا۔یہ سلسلہ جو قادری صاحب نے شروع کر رکھا ہے لانگ مارچ والا بظاہر تو طاہر صاحب کا مقصد ٹھیک لگتا ہے کہ وہ حکومت ہٹانا چاہتے ہیں مگر وہ خود تو ایک بلٹ پروف، بم پروف اور فائر پروف کنٹینر میں بند ہے اور غریب عوام جس میں عورتیں، بچے اور بوڑھے بھی شامل ہیں سخت سردی کے اندرکھلے آسمان کے تلے بیمار ہو رہے ہیں۔ جبکہ طاہر صاحب اور ان کے اہل خانہ مسلسل ہیڑ سے اپنے بدن کو تپش دے رہے ہیں۔ وہ خود تو دودھ اور شہد نوش فرما رہے ہیں جبکہ غریب عوام اپنے لیے پتہ نہیں کس کس طرح کھانے کا سامان کر رہی ہے۔ کیا ایسا شخص جو کہ ابھی برسراقتدار نہیں ہے جب اقتدار میں ہو گا تو عوام کا درد سمجھ سکے گا؟

جو جھوٹ بولنے کی انتہا کردے اور بات بات پر اللہ کی قسم کھائے کیا وہ قابل اعتبار آدمی ہے؟

جو کینیڈا میں بیٹھ کر سود کو کینیڈا والے مسلمانوں کے لیے جائز قرار دے دے کیا وہ ایک مسلمان سکالر یا مسلمان عالم کہلانے کے لائق ہے؟ ثبوت دیکھیں یہاں پر کلک کریں

جو شخص کشمیر میں ہونے والے جہاد کو ناجائز قرار دے دے کیا وہ یہودیوں کا اور ہندوئوں کا ایجنٹ نہیں۔ اس خبیث کے مطابق کشمیر ہمارا ملک  ہی نہیں ہے۔ ثبوت کے لیے مہیا کی گئی ویڈیو کا لنک یہاں پر کلک کریں

جو اس طرح شرک کرے کہ عیسائی لوگوں کو کرسمس کی مبارکباد دے یعنی اس بات سے متفق ہو جائے کہ نعوذباللہ حضرت عیسیٰ علیہ السلام اللہ کے بیٹے ہیں۔ کیا وہ مسلمان ہے؟ اور شرک ایسا گناہ ہے جس کا اللہ نے کہا ہے کہ معافی نہیں دوں گا۔

جو دین اسلام کو کھیل بنا لےاور مسجد کے اندر میوزک کی تاپ پر ناچنے کا کھیل کھیلے کیا وہ مسلمان بھی کہلانے کے لائق ہے؟ ثبوت کے لیے ویڈیو کا لنک ہے یہاں پر کلک کریں  واضح رہے کہ اسلام میں بھنگڑا یا  کسی بھی قسم کے ناچنے کی کوئی گنجائش نہیں ہے۔کیا اتنی سی بات اپنے آپ کو عالم کہنے والے شخص کی سمجھ میں نہیں آتی؟

اپنی مرضی کے تو سارے نقات اپنے ایجنڈے میں رکھے مگر ڈاکٹر عافیہ جیسا اہم معاملہ کبھی بھی اپنے ایجنڈے میں کیوں نہیں رکھا گیا۔ اس سے ہم کیا سمجھیں؟

دوسروں کو چور اور ڈاکو کہنے والا شخص کیا یہ بتا سکتا ہے کہ اس کے لانگ مارچ کے لیے بجلی مختلف جگہوں سے چوری کی گئی تو کیا وہ بھی ان چوروں کے ساتھ نہیں؟ ثبوت کے لیے لنک یہاں پر کلک کریں

جو شخص شہرت کا بھوکا ہو اور جھوٹ بولنا اس کے لیے کوئی بڑی بات نہ ہو کیا اس کا ساتھ دیا جانا چاہیے؟ جب جنرل پرویز مشرف کا دور حکومت کا آغاز ہو ا تھا تو طاہر القادری نے ایک پریس کانفرنس کی اور ایک افوہ پھیلائی کہ انہیں وزارت عظمی کی پیش کش کی گئی ہے۔ پریس کانفرنس کے دوران طاہر القادری کو ایک فون کال موصول ہوئی جو کہ ان کے کارندے کے مطابق جنرل مشرف کی تھی اور پھر انہیں وزارت کی ہی پیش کش کی جارہی تھی۔ جب کہ اسی وقت پاکستا ن کے تمام موبائل نیٹ ورک بند پڑے تھے۔ جب موبائل کام ہی نہیں کر رہے تھے تو طاہر القادری کو کال کیسے آگئی۔ ثبوت کے لیے ویڈیو یہاں پر کلک کریں

جو اپنے آپ کو عالم اور دودھ کا دھلا ظاہر کرے اور موسیقی کی تاپ پر جھوم جھوم جائےاور ایسی محفلوں کی زینت بنے جہاں پر شاید ناچنے گانے والے زیادہ اچھے لگیں تو کیا ایسے شخص کا ساتھ دیں؟ ثبوت کے لیے لنک یہاں پر کلک کریں

جو نعوذ باللہ اپنے آپ کو سجدے کروائے کیا وہ ذہنی مریض ہونے کے ساتھ ساتھ بہت بڑے شرک کا مرتکب نہیں ہوا؟ کیا وہ کبھی بھی قابل اعتبار ہے؟ ثبوت دیکھیے یہاں پر کلک کریں

جو یہودیوں اور عیسائیوں کو کافر ماننے کے لیے تیار نہ ہو اور کہے کہ وہ صرف بلیورز ہیں کافر نہیں تو کیا یہ گمان نہیں ہو گا کہ یہ یہودیوں کا ایک ایجنٹ ہے جو کچھ نہ کچھ لوگوں کے ذہن بدلنے میں کامیاب ہو ہی جائے گا۔ ویڈیو دیکھیں یہاں پر کلک کریں

جو لندن کے خطاب میں اپنے آپ کو 15، 20 سال عالم خواب میں امام اعظم کا شاگرد بتائے اور دو ماہ کے بعد حیدرآباد کے خطاب میں9 سال شاگردی کی جھوٹی کہانی سنائے تو اسے کیا کہیں۔جھوٹ کے پائوں نہیں ہوتے،ظاہر ہے کہ طاہرالقادری کو یاد نہیں رہا کہ کتنے سال پہلے بتا چکا ہے وہ بھی من گھڑت اور فرضی سال تھے اور یہ بھی۔ کیا پہلے کبھی سنا ہے کہ کسی نے خواب کے عالم میں کسی کی شاگردی کی ہے۔ اس بات سے تو اس فتنے کی حقیقت تو اور زیادہ واضح ہو جاتی ہے اور صاف نظر آتا ہے کہ یہ شخص کتنا بڑا جھوٹ اور مکار آدمی ہے۔ ثبوت کے لیے یہاں پر کلک کریں

میرے پاس طاہر القادری کے بارے میں کہنے کو بہت کچھ ہے مگر میرا خیال ہے کہ میں جو بات کہنا چاہتا ہوں وہ اتنا بلاگ پڑھ کر سمجھ آ ہی جائے گی۔ خدا کے لیے نادان لوگو اپنی آنکھیں کھولو اور سمجھ لو کہ یہ ایک فتنہ ہے فتنہ جو صرف ہمیں تباہی کی طرف لے کر جائے گا۔ جو شخص اپنی یونیورسٹی کو دنیا کی بہترین یونیورسٹی قرار دے مگر اپنی اولاد کو کینیڈا اور انگلینڈ بھیجے تعلیم کے لیے۔ کیا اس کی یونیورسٹی اتنی بہترین نہیں کہ اس کی اپنی اولاد اس میں تعلیم حاصل کر سکے۔

میری سچے دل سے اللہ سے یہ دعا ہے کہ اے اللہ ہمیں اس فتنے سے بچا لے۔ آمین