پاکستان بمقابلہ انڈیا – 25 دسمبر 2012

پاکستان اور انڈیا کے درمیان پانچ سال کے بعد شروع ہونے والی کرکٹ سیریز کا پہلا ٹوئنٹی ٹوئنٹی میچ آج یعنی 25 دسمبر 2012 بروز منگل کھیلا جا رہا ہے۔ پاکستان نے ٹاس جیت کر پہلے بائولنگ کرنے کا فیصلہ کیا جو کہ بظاھر درست دکھائی دے رہا ہے۔ پاکستان کے بہترین بائولرز نے نہایت شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کیا اور انڈیا کے بیٹسمین کو کھل کر کھیلنے کا موقع نہ دیا۔ انڈیا کی ٹیم صرف 133 رنز ہی بنا سکی۔ انڈیا کی اننگ کے آغاز سے لگ رہا تھا کہ شاید پاکستان کو ایک بہت بڑا سکور کرنے کو ملے گا مگر یہ سوچ پاکستان کے مایا ناز گیند بازوں نے غلط ثابت کر دی۔ انڈیا کی اننگ کا آغاز بہت اچھا تھا مگر پاکستان کے گیند بازوں نے بازی پلٹ کر رکھ دی اور انڈیا کو چاروں شانے چت کردیا۔ انڈیا بے شک بیٹنگ کے شعبہ میں ایک مظبوط ٹیم ہے مگر پاکستان کے گیند بازوں سے زیادہ نہیں۔ پاکستان کی موجودہ ٹیم میں دنیا کے بہتریں گیند بازوں میں سے پہلے تین گیند باز شامل ہیں۔ جن میں سعید اجمل پہلے نمبر پر، عمر گل دوسرے نمبر پر اور شاہد آفریدی تیسرے نمبر پر ہیں۔ آج بھی سعید اجمل نے بہترین گیند بازی کی اور انڈیا کے بلے بازوں کو کچھ سمجھ نہیں آنے دیا۔ انڈیا کے کپتان مھندر سنگھ دھونی جب آئوٹ ہوئے تو انہیں کچھ سمجھ نہیں آئی کہ ان کے ساتھ کیا ہوا ہے۔ سعید اجمل کی پھینکی ہوئی گیند چالاکی سے دھونی کے بلے کو دھوکا دے کر ہلکی سی وکٹ کو جا لگی اور وکٹ نے گرنے میں تھوڑا سا وقت لیا جس وجہ سے اس آَئوٹ کا فیصلہ بھی تھرڈ ایمپائر نے کیا۔ انڈیا کے ایک جوان بلے باز نے اچھی بیٹنگ کی یہ ان کا پہلا میچ تھا اور انہوں نے 42 رنز سکور کئے اور ان کا نام Rahane ہے۔

جب پاکستان کی اننگ کا آغاز ہوا تو کافی مایوسی ہوئی۔ پاکستان کی پہلی 3 وکٹیں بہت جلدی گر گئیں اور تمام وکٹیں ایک ہے گیند باز نے حاصل کیں۔ صرف 3 آورز میں 12 کے مجموعی سکور پر3  وکٹیں گر چکی تھیں مگر کپتان محمد حفیظ اور شعیب ملک نے ذ مے دارانہ بیٹنگ کی اور انڈیا کے گیند بازوں کو ناکوں چنے چبوا دیے۔ محمد حفیظ نے ایک مرتبہ پھر ثابت کیا کہ وہ ایک بہترین کپتان اور بلے باز ہے۔ محمد حفیظ نے 61 رنز کی شاندار اننگ کھیلی اور بد قسمتی سے اشانت شرما کی گیند پر کمار کے ہاتھوں کیچ آئوٹ ہوئے اور ان کا بھر پور ساتھ دیا شعیب ملک نے، انہوں نے بھی دھواں دار بیٹنگ کرتے ہوئے نصف سینچری بنائی۔

محمد حفیظ نے 2 چھکے مارے اور شعیب ملک نے 3 چھکے مارے۔ میچ کے آخری اوور میں 10 سکور درکار تھے شعیب ملک اور شاھد آفریدی ذ مے داری سے بیٹنگ کر رہے تھے۔  اوور کی چوتھی گیند پر 6 رنز درکار تھے شعیب ملک نے زبردست چھکا مار کر میچ کا فیصلہ کیا اور میچ پاکستان کے نام کر دیا اور انہوں نے 57 رنز کی نا قابل شکست اننگ کھیلی۔ پاکستان نے پہلے ٹوئینٹی ٹوئینٹی میچ میں بہت ہی اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے اور پاکستان کی عوام کے سر فخر سے بلند کرنے کے ساتھ ساتھ ان کے دل بھی جیت لئے۔

ٹاس جیت کر پہلے گیند بازی کرنے کا فیصلہ بہت ہی درست ثابت ہوا۔ گو کہ پاکستان بیٹنگ کے شعبہ میں اتنا مظبوط نہیں ہے مگر پھر بھی آج پاکستان کے بلے باز ایسے کھیل رہے تھے جیسے کسی گلی کی ٹیم کے لڑکے ان کے سامنے باولنگ کر رہے ہیں اور وہ کسی بھی قسم کے دبائو میں نظر نہیں آرہے تھے۔ میری دعا ہے کہ اللہ دوسرے میچ میں بھی پاکستان کو کامیابی سے ہمکنار کرے۔ آمین

Cricket - India v Pakistan 1st T20I Bengaluru